بچہ بچہ جانتا ہے مے فیئر فلیٹس قومی دولت لوٹ کر بنائے گئے،قومی ادارے جعلی کاغذات بناکر شریف خاندان کو بچانے میں لگے ہیں،صحافیوںسے گفتگو فاٹا کی سکیورٹی صورتحال انتہائی خراب ،خیبرپختونخوا میں ضم کرنے کے علاوہ کوئی راستہ نہیں ،چیئرمین پی ٹی آئی،میڈیکل کمپلیکس پشاور میںزخمیوں کی عیادت


اسلام آباد،پشاور ٟبیورورپورٹٞتحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے شریف خاندان کے بیانات میں تضاد ہے بیرون ملک جائیداد کا کوئی ثبوت نہیں ، اسحاق ڈار کا بیان ہی منی ٹریل ہے قومی ادارے جعلی کاغذات بنانے اور شریف خاندان کو بچانے میں لگے ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے پانامہ لیکس کے مقدمے کی سماعت کے بعد سپریم کورٹ کے باہر صحافیوں سے گفتگو میں کیاچیئرمین تحریک انصاف نے کہا نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز نے ٹی وی انٹرویو میں کہا بیرون ملک کوئی جائیداد نہیں جبکہ حسین نواز سمیت خواجہ آصف و دیگر نے تسلیم کیا بیرون ملک مے فیئر فلیٹس جائیداد خریدی گئی انہوں نے کہا پانامہ لیکس دستاویزات سامنے آنے سے شریف خاندان کی باہر جائیدادیں سامنے آئیں اور لندن مے فیئر فلیٹس کی ملکیت کے حوالے سے ٟ آئی سی آئی جے ٞ انویسٹی گیسٹو صحافی تنظیم ،عالمی نشریاتی ادارے ٟ بی بی سی ٞ نے کنفرم کیا لندن فلیٹس کی بینیفشری اونر مریم نواز ہیں جبکہ نواز شریف نے اسمبلی کے فلور پر تسلیم کیا بیرون ملک جائیداد کی تمام دستاویزات ،ثبوت موجود ہیں لیکن گزشتہ 9 ماہ کے دوران کوئی ایک بھی ثبوت فراہم نہیں کیا گیا انہوں نے مزید کہا سپریم کورٹ میں پانامہ لیکس کیس میں اپنے دفاع کےلئے شریف خاندان کوئی ایک بھی ثبوت پیش نہیں کر سکا البتہ جعلی دستاویزات سے کیس لڑنے کی کوشش کی جا رہی ہے عمران خان نے کہا یہ لاکھ بھاگنے کی کوشش کریں لیکن اسحاق ڈار کا اعترافی بیان ہی بیرون ملک جائیداد سے متعلق اصل منی ٹریل ہے بچہ بچہ جانتا ہے مے فیئر فلیٹس قومی دولت لوٹ کر بنائے گئے دریں اثنائ تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے حیات میڈیکل کمپلیکس پشاور میں خود کش حملے میں زخمی ہونیوالوں کی عیادت کی اور انہیں بہترین طبی امداد دینے کی ہدایت کی چیئرمین تحریک انصاف عمران خان اور وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے پشاور ،لاہو ر میں ہونےوالے دہشتگرد حملوں کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہادہشتگردی ختم کرنے کیلئے ضروری ہے جتنا جلد ممکن ہوسکے فاٹا کو خیبر پختونخوا میں ضم کردیا جائے عمران خان کا کہنا تھافاٹا کی سکیورٹی صورتحال انتہائی خراب ہے اور اسی علاقے سے دہشتگرد آ کر کارروائیاں کرتے ہیں، دہشتگردی کی نئی لہر آ رہی ہے اس لیے ایجنسیوں سمیت سب لوگوں کو آپس میں تعاون کرنا پڑےگا اگر ضرب عضب اور قومی ایکشن پلان سے فائدہ اٹھانا ہے تو ضروری ہے جتنی جلدی ممکن ہو سکے فاٹا کو خیبر پختونخوا میں ضم کریںجتنی تاخیر ہوگی اتنا ہی دہشتگردوں کو کھل کر کھیلنے کا موقع ملے گاانہوں نے کہا فاٹا کو خیبر پختونخوا میں ضم کرنے کے علاوہ کوئی اور راستہ نہیں۔ عمران خان