پاکستان جنوبی ایشیا ٴ وسط ایشیا اور چین کے درمیان اہم تجارتی مرکز بنے گا، چند برس قبل سی پیک منصوبے کا جو خواب دیکھا تھا وہ حقیقت کا روپ دھار رہا ہے، منصوبے کی کامیابی میں بلوچستان کی حکومت نے اہم کردار ادا کیا ،وزیراعظم دہشتگردی کے مکمل خاتمے کےلئے پرعزم ہیں، ہم خوشحال اور متحد پاکستان کیلئے دن رات کام کررہے ہیں، غربت کا خاتمہ اور ملک کی ترقی ہماری حکومت کا ویږن ہے ، گوادر میںسی پےک کے تحت پہلے میگا ٹریڈ کارگو کی روانگی کی تقریب سے خطاب


گوادرٟبےورورپورٹٞوزیراعظم محمد نوازشریف نے کہا ہے کہ سی پیک سے ترقی اور خوشحالی کی نئی راہیں کھلیں گی، سی پیک سے پاکستان تجارتی و معاشی سرگرمیوں کا مرکز بن جائے گا، پاکستان جنوبی ایشیا ٴ وسط ایشیا اور چین کے درمیان اہم تجارتی مرکز بنے گا،منصوبے کی تکمیل سے پاکستان ، چین اور خطے کے دیگر ممالک کو بھی فائدہ ہوگا ، چند برس قبل سی پیک منصوبے کا جو خواب دیکھا تھا، اب وہ حقیقت کا روپ دھار رہا ہے، یہ منصوبہ اس خطے کے علاوہ دنیا بھر کے ممالک کے لئے ایک سنگ میل کی حیثیت رکھتا ہے، منصوبے کی کامیابی میں بلوچستان کی حکومت نے بھی اہم کردار ادا کیا ،سی پیک سے خطے کی بہت بڑی آبادی کو فائدہ پہنچے گا، سرکایہ کاروں کو وسیع مواقع میسر آئیں گے، روز گار کے ہزاروں مواقع میسر آئیں گے، دہشت گردی کے مکمل خاتمے کے لئے پرعزم ہیں، ہم خوشحال اور متحد پاکستان کیلئے دن رات کام کررہے ہیں،سی پیک قومی پروگرام ہے، منصوبے کے مخالف پاکستان کے مخالف ہیں،غربت کا خاتمہ اور ملک کی ترقی ہماری حکومت کا ویږن ہے، سی پیک منصوبہ تین ارب افراد کی خوشحالی کا ضامن ہے۔وہ اتوار کو گوادر میں پہلے میگا ٹریڈ کارگو کی روانگی کی تقریب سے خطاب کررہے تھے ۔انہوں نے کہا کہ اتوار کو گوادر سے پہلے میگا پائلٹ ٹریڈ کارگو کو روانہ کرنے کی تقریب منعقد کی گئی ٴ تقریب کا باقاعدہ آغاز تلاوت کلام پاک سے کیا گیا۔ تقریب میں وزیراعظم محمد نواز شریف اور آرمی چیف جنرل راحیل شریف مہمان خصوصی تھے۔ وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثنائ اË زہری اور وفاقی وزیر عبدالقادر بلوچ نے وزیراعظم کا پرجوش استقبال کیا۔ وزیر دفاع خواجہ آصفٴ آرمی چیف جنرل راحیل شریفٴ وفاقی وزیر احسن اقبالٴ قومی سلامتی کے مشیر ناصر خان جنجوعہٴ نیشنل پارٹی کے میر حاصل بزنجو اور جے یو آئی کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نواز شریف کے ہمراہ تھے۔ چیف آف نیول سٹاف ایڈمرل ذکائ اËٴ چیف آف ایئر سٹاف ایئرچیف مارشل سہیل امانٴ چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل راشد محمود تقریب میں شریک تھے۔ تقریب میں پاکستان چین اقتصادی راہداری سے متعلق دستاویزی فلم دکھائی گئی۔افتتاحی تقریب سے وزیر اعظم نواز شریف، وزیر اعلی بلوچستان نواب ثنا اللہ زہری اور چینی سفیر سن وائی ڈونگ نے خطاب کیا جس کے بعد آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے وزیر اعظم کو سووینئر پیش کیا۔سووینئر پیش کرنے کی تقریب کے بعد وزیر اعظم نواز شریف، آرمی چیف، وفاقی وزرا اور دیگر شخصیات گوادر کی بندر گاہ کی جانب روانہ ہوئے جہاں وزیر اعظم نے پہلے تجارتی قافلے کے پائلٹ پروجیکٹ کا افتتاح کیا اور دعا مانگی۔کاشغر سے گوادر اور گوادر سے مشرق وسطی اور افریقی ممالک کو برآمدات کا آغاز ہو گیا ، پاک چین اقتصادی راہداری کے ذریعے پہلا تجارتی قافلہ گوادر پہنچ گیا۔ سامان کی ترسیل کیلئے2 چینی بحری جہاز گوادر بندگاہ پر لنگرانداز ہو گئے۔ وزیراعظم محمد نواز شریف اور جنرل راحیل شریف نے پہلے تجارتی قافلے کے پائلٹ پروجیکٹ کا افتتاح کیا۔ اس موقع پر وزیراعظم نواز شریف نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سی پیک کا منصوبہ حقیقت کا روپ دھار رہا ہے۔ سی پیک چینی صدر شی چن پنگ کے ایک خطہ ایک سڑک ویږن کا عکاس ہے۔ سی پیک سے پاکستان تجارتی و معاشی سرگرمیوں کا مرکز بن جائے گا۔ پاکستان جنوبی ایشیائ ٴ وسط ایشیائ اور چین کے درمیان اہم تجارتی مرکز بنے گا۔ کاشغر سے گوادر تجارتی قافلے کی آمد سے نئی تاریخ رقم ہوگی اور گوادر سے تجارتی بحری جہاز کی روانگی اہم سنگ میل ہے۔ گوادر اقتصادی مرکز بننے جارہا ہے۔ اقتصادی راہداری سے علاقے میں امن و سلامتی آئے گی۔ ایف ڈبلیو او کی کاوشوں کی بدولت سڑکوں کا ایک مربوط نیٹ ورک بن گیا ہے۔ بلوچستان میں شاہرائوں کے متعدد منصوبے مکمل کئے جائیں گے۔ نواز شریف نے کہا کہ آئندہ مالی سال خضدارٴ کوئٹہٴ ږوب ٴ ڈی آئی خان کو دو رویہ کرنے کے لئے دو سو ارب روپے جاری کریں گے۔ ایف ڈبلیو او کے چالیس شہدائ کو بھی خراج عقیدت پیش کرتا ہوں اور منصوبوں کی تکمیل میں ذاتی دلچسپی لینے پر جنرل راحیل شریف کا مشکور ہوں۔ پاک بحریہ کی کوششوں کو بھی سراہتے ہیں۔ گوادر اقتصادی راہداری منصوبے کے سرکا تاج ہے۔ گوادر میں آزاد تجارتی ږون کے لئے زمین مختص کردی گئی ہے۔ سی پیک سے ترقیٴ خوشحالی کے نئے دور کا آغاز ہوگا۔ گوادر میں ساڑھے گیارہ ارب روپے کی لاگت سے پانچ ملین گیلن یومیہ پانی کی فراہممی یقینی بنائیں گے اور پچاس بستروں پر مشتمل گوادر ہسپتال کو تین سو بستروں تک اپ گریڈ کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ گوادر میں ووکیشنل ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ اور یونیورسٹی بھی قائم کی جائے گی۔ گوادر میں تین سو میگا واٹ بجلی پیدا کرنے کا منصوبہ لگایا جارہا ہے۔ اقتصادی راہداری منصوبہ پورے پاکستان کے لئے ہے۔ سی پیک کے ثمرات سے پورا ملک مستفید ہوگا۔ سی پیک کو کامیاب بنانے کے لئے پوری قوم متحد ہے۔ نواز شریف نے کہا کہ دہشت گردی کے مکمل خاتمے کے لئے پرعزم ہیں۔ ہم خوشحال اور متحد پاکستان کیلئے دن رات کام کررہے ہیں۔ سی پیک قومی پروگرام ہے، منصوبے کے مخالف پاکستان کے مخالف ہیں۔ درگاہ شاہ نورانی پر حملے کی شدید مذمت کرتے ہیں۔ غربت کا خاتمہ اور ملک کی ترقی ہماری حکومت کا ویږن ہے۔ سی پیک منصوبہ تین ارب افراد کی خوشحالی کا ضامن ہے۔ آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے وزیراعظم نواز شریف کو سوینئر پیش کیا۔ آرمی چیف اور وزیراعظم نے چینی کمپنی سائنو ٹرانس کے عہدیدار کو سونیئر دیا ۔آرمی چیف جنرل راحیل سریف کو بھی سوینئر پیش کیا گیا۔ نوازشریف